تعصب

تقسیم کی سیاست کرنے والوبتاو
تقسیم سے قحط آنہیں جائے گا کیا
نفرت کی تجارت کرنے والو بتاو
تعصب ہمیں کھا نہیں جائے گا کیا

اوے ابّا پیسے دے، شراب لینی ہے!

گلی میں ایک لڑکاجس کی عمر مشکل سے بیس سال ہوئی ہو گی ، ہاتھ میں کوئی کاٹنے والی چیز پکڑے اپنے سے تگنی عمروں کے تین چار مردوں سے گالم گلوچ کر رہا تھا۔ ان میں سے ایک شخص نے ہاتھ میں ایک پائیپ نما ڈنڈا پکڑا ہوا تھاجس سے اندازہ لگایا جا سکتا…

ترکِ تعلق

ترکِ تعلق کا کہا بھی تو تو بتا دل سے کہا تھا کیا اوربچھڑجانے کی بات پر میں رو نہیں دیا تھا کیا ***** عمران خوشحال

رات

یوں لگتا ہے رات اک پڑاو ہے اور صبح سفر کا پہلا پہر دن چڑے قافلوں کے قافلے اور پھر ایک اک کر کہ گھٹ رہے لوگ اپنی اپنی دشاوں میں بٹ رہے شام کے سائے پھر گہرے ہوتے ہیں اور میرے ساتھ فقط دو چار لوگ بچتے ہیں پھر یہ بھی نہیں رہتے اور…

تیرے پہلو میں کیا رہا

تیرے پہلو میں کیا رہا دل پھر نہ میرا رہا اک رہی بس تیری کمی یوں تو دامن بھرا رہا ہاتھوں میں رہی چھونے کی طلب آنکھوں میں تیرا نقش سا رہا جو اترے نہ کبھی سر سے نشہ تیرا ایسے چڑھا رہا رہے ایسے اس جہاں میں کوئی بیچ بتوں کے جیسے خدا رہا…